Press ESC to close

QuoteBookQuoteBook Urdu Quotes, Stories, Poetry and Golden Words

Miraj-Un-Nabi (PBUH)

Short Islamic Story for kids in Urdu

معراج النبی ﷺ

شب معراج اسلام کی تاریخ میں ایک اہم واقعہ ہے اور اس پر ایمان لانا لازمی قرار دیا گیا ہے۔
امام جعفر صادق نے فرمایا:
جو معراج کے واقعہ پر یقین نہیں رکھتا وہ ہم میں سے نہیں ہے۔ قرآن حکیم میں بھی اس مقدس رات کا ذکر آیا ہے جس میں واضح طور پر یہ لکھا گیا ہے کہ ماہ رجب کی ۲۷ ( ستائیس ) تاریخ کو اللہ تعالیٰ نے حضرت جبرائیل کو حضرت محمدﷺکے پاس بھیجا انہیں ساتوں آسمانوں کی سیر کے لیے اور قرآن حکیم میں اس با برکت سفر کو معراج کا نام دیا۔ ۲۷ رجب کی رات حضرت جبرائیل حضرت محمد ﷺکے گھر حاضر ہوئے اور آپ صلی اقلیم کو نیند سے بیدار کیا اور اللہ کا پیغام دیا۔ حضرت محمدصﷺنے اٹھ کر وضو فر مایا اور اپنے گھر سے باہر تشریف لے آئے ۔ پہلے آپ خانہ کعبہ تشریف لے گئے اور وہاں سے مسجد اقصیٰ تشریف لے گئے۔ مسجد اقصیٰ سے آپ ﷺنے ساتوں آسمانوں کی طرف سفر شروع کیا۔ جب آپ ﷺسدرۃ المنتہی پہنچے تو حضرت جبرائیل نے عرض کیا کہ
میرا اور آپ کا ساتھ یہاں تک کا ہی تھا اس سے آگے جانے پر میں جل جاؤں گا۔ آگے کا سفر حضرت محمد ﷺنے اکیلے ہی طے فرمایا ۔

اس مقدس رات میں آپ صلی ﷺاللہ تعالی سے ہم کلام ہوئے اور آپ ﷺکو بہت سے مقامات دکھائے گئے اور فرشتوں سے ملاقات فرمائی ۔ آپ ﷺنے سب کو نماز پڑھائی۔ اس رات آپ ﷺ کو جنت اور دوزخ بھی دکھائے گئے۔ آپ ﷺنے طرح طرح کی سزا میں مبتلا لوگوں کو دیکھا۔ اس رات امت محمدی کو پانچ نمازوں کا تحفہ دیا گیا اور ساتھ ہی ان پانچ نمازوں کی ادائیگی کے بدلے میں پچاس نمازوں کے ثواب کی بشارت سنائی گئی۔ ستائیس (۲۷) کی بابرکت رات میں آپ ﷺنے بہت عبادت کی اور سارا دن روزہ میں رہے۔ اس دن کی عبادت کو بہت زیادہ درجہ دیا گیا ہے۔ شب معراج پر یقین رکھنا ایمان کا حصہ ہے۔ معجزاتِ معراج النبی ﷺکو دیکھ کر اس رات پر ایمان اور بھی مضبوط ہو جاتا ہے۔

Leave a Reply

Table of Content